مقبوضہ کشمیر: ائیر ٹیل کے لاکھوں صارفین کم ہوگئے

مقبوضہ کشمیر: ائیر ٹیل کے لاکھوں صارفین کم ہوگئے

جموں،23نومبر (ساؤتھ ایشین وائر)

جموں و کشمیر میں موبائل سروسز بند ہونے کی وجہ سے جولائی تا ستمبر 2019 میں ایئرٹیل کمپنی نے جموں و کشمیر میں 25-30 لاکھ صارفین کو کھو دیا ہے۔

ساؤتھ ایشین وائر کے مطابق بھارت اور جنوبی ایشیاء کے منیجنگ ڈائریکٹر اور چیف ایگزیکٹو آفیسر گوپال وتل نے کہا کہ جموں و کشمیر میں ہم نے 25-30 لاکھ کو صارفین کو کھو دیا۔

انہوں نے کہا کہ وادی کشمیر میں پری پیڈ سروسز دوبارہ شروع ہونے کے بعد صارفین واپس آجائیں گے۔

ساؤتھ ایشین وائر کے مطابق بھارت اور جنوبی ایشیا کے ایئرٹیل کمپنی کے چیف فنانشل آفیسر بادل باگری نے بھی کہا کہ جموں وکشمیر میں موبائل سروس بند ہونے کی وجہ سے جولائی سے  ستمبرتک کے مجموعی طور پر صارفین متاثر ہوئے ہیں جس سے کمپنی کو کافی نقصان اٹھانا پڑا ہے۔

5 اگست کو مرکزی حکومت نے جموں و کشمیر کی خصوصی آئینی حیثیت دفعہ 370 کو منسوخ اور ریاست کو مرکز کے زیر انتظام دو علاقوں جموں و کشمیر اور لداخ میں تقسیم کرنے کا اعلان کیا تھا۔

4 اور 5 اگست کی درمیانی رات سے انتظامیہ نے تمام مواصلاتی نظام پر پابندی عائد کر دی تھی۔ تب سے ہی وادی کشمیر میں پریپیڈ موبائل فون سروس بند ہے۔

Comments are closed, but trackbacks and pingbacks are open.